Tuesday, 8 April 2014

امریکہ کے سابق چیئرمین جائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی مائیک مولن نے خبردار کیا ہے کہ ذہنی صحت کے امراض میں مبتلا فوجی اہلکاروں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔ بیرون ممالک جنگوں میں مصروف فوجی ذہنی دبائو کا شکار ہیں، اسلئے انکے علاج کی ضرورت ہے۔ان کو واپس بلانے اور علاج کی ضرورت ہے۔ وہ امریکی ٹی وی کو انٹرویو دے رہے تھے۔ مائیک مولن نے کہا کہ افغانستان، عراق اور دیگر ممالک میں موجود امریکی فوجی دستوں میں ایسے اہلکاروں کی تعداد بڑھ رہی ہے جو ذہنی صحت کے امراض میں مبتلا ہیں اسی وجہ سے وہ نفسیاتی طور پر بھی مفلوج ہو رہے ہیں۔ یہ ایک بہت بڑا خطرناک چیلنج ہے۔ اندر بھی فوجی اہلکاروں میں ذہنی صحت کے امراض پائے جاتے ہیں۔ یہ ایک قومی مسئلہ ہے۔ بیسز کے اندر فوجی اہلکاروں کے ہاتھوں میں اسلحہ نہیں ہونا چاہئے کیونکہ وہ اپنے ساتھیوں پر بھی حملہ کرسکتے ہیں۔ ٹیکساس میں پیش آنے والا واقعہ بھی اس سلسلے کی کڑی ہے۔

If You Like This Post. Please Take 5 Seconds To Share It.

comments please

Follow by Email

SEND FREE SMS IN PAKISTAN