Tuesday, 14 October 2014

قدرت جب کسی پر مہربان ہوتی ہے تو اس کے دل کو نور ہدایت سے منور کر دیتی ہے اور تاریکی سے نور کی جانب سفر کرنے والے ہر شخص کی کہانی روح پرور ہوتی ہے۔مگر بعض دفعہ اس کی خوبصورتی بہت ہی نرالی ہوتی ہے۔ امریکہ کے مشہور اخبار \" سٹار \" کی رپورٹر کرسٹن زریمسکی کے قبول اسلام کی کہانی بھی بہت خوبصورت اور ایمان تازہ کرنے والی ہے۔واشنگٹن پوسٹ کو دیے گئے ایک حالیہ انٹرویو میں کرسٹن نے بتایا کہ اس کے اخبار نے اسے بطور سپیشل رپورٹر شکاگو شہر کے عرب شہریوں پر تحقیق کے لیے بھیجا ۔اس دوران اسے اسلام پر تحقیق کا موقع ملا۔ کرسٹن کا کہنا ہے کہ اس کی پرورش بطور عیسائی ہوئی تھی اور وہ جدید مغربی زندگی کی دلدادہ تھی۔جب اس نے صحافتی ذمہ داریوں کے باعث اسلام کا مطالعہ شروع کیا تو گویا اس کے لیے تازہ ہوا اور روشنی کا دروازہ کھل گیا۔اس نے محسوس کیا کہ یہ دین تو مغربی تہذیب کی چمک دمک کے برعکس حقیقی روشنی اور روح کی تسکین کی طرف رہنمائی کرتا ہے۔کرسٹن نے بتایا کہ ایک دن وہ قرآن حکیم کا پیغام سمجھنے کی کوشش میں اس مقدس کتاب کی ورق گردانی کر رہی تھی کہ اچانک بے اختیار اس کی زبان پر کلمہ طیبہ جاری ہو گیا اور اس کا دل طمانیت سے بھر گیا۔ حال ہی میں اس نے حج کی سعادت بھی حاصل کی ہے اور اس نے اس انٹر ویو میں بتایا کہ اس تجربے سے اس کا ایمان اور مضبوط ہو گیا ہے اور اس کی خواہش ہے کہ وہ اپنے پیاروں کو بھی اس خوبصورت تحفے سے روشناس کروائے


If You Like This Post. Please Take 5 Seconds To Share It.

comments please

Follow by Email

SEND FREE SMS IN PAKISTAN