Tuesday, 1 April 2014


میکسیکو سٹی سماجی روابط کی ویب سائٹس فیس بْک اور ٹویٹر وغیرہ یوں تو برسوں سے بچھڑے رشتے داروں،دوستوں اور ہم جماعتوں کو آپس میں ملا رہی ہیں اور انھیں ایک دوسرے کے قریب لا رہی ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ ان کی وجہ سے ایک دوسرے کے بہت قریب ہونے والے دور بھی ہورہے ہیں اور بعض اوقات تو دو قریبی ایک دوسرے کیخون کے پیاسے ہورہے ہیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایسا ہی ایک ہولناک واقعہ میکسیکو میں پیش آیا ہے جہاں ایک سولہ سالہ لڑکی نے اپنی بہترین دوست لڑکی کو چاقو کے پے درپے پینسٹھ وارکرکے موت سے ہم کنار کردیا ہے۔ان دونوں دوست لڑکیوں کے درمیان تنازعہ فیس بْک پرعریاں تصاویراپ لوڈ کرنے سے شروع ہوا تھا جو ایک لڑکی کی ناگہانی موت پر منتج ہوا۔ایرینڈی ایلزبتھ گوئٹائریز کواس بات کا رنج تھا کہ اس کی دوست لڑکی انیل باعز نے دونوں کی عریاں تصاویر فیس بْک پر اپ لوڈ کردی تھیں۔برطانوی ویب سائٹ میٹرو کی رپورٹ کے مطابق گوئٹائریز نے اپنی دوست کو ٹویٹ کیا کہ ''وہ اس سال کے آخر تک زندہ رہ گئی تو وہ بہت خوش قسمت ہوگی۔بظاہر میں بہت پْرسکون ہوں لیکن میرے دماغ میں یہ ہے کہ میں نے تمھیں کم سے کم تین مرتبہ قتل کردیا ہے''۔میکسیکن پولیس کی رپورٹ کے مطابق سولہ سالہ باعز اپنی دوست کی اس دھمکی کے بعد ہنس دی اور اس نے اپنی دوست کو گواموشیل شہر میں واقع اپنے گھر میں آنے کی دعوت دی۔اس دوران ان کے درمیان عریاں تصاویر کے تنازعے پر توتکار ہوگئی یا لڑکی پہلے سے ہی قتل کے ارادے سے آئی تھی اوراس نے اپنی دوست کی کمر میں چاقو کے پے درپے وار کرنا شروع کردیے اور اس کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔پولیس کے مطابق اس سنگدل قاتلہ گوئٹائریز نے اپنی بہترین دوست کو قتل کرنے کے بعد اپنے کپڑوں اور ہتھیار پر لگے خون کے دھبے صاف کرنے کی کوشش کی تھی مگر وہ اس میں ناکام رہی اور وہ موقع سے فرار بھی ہوگئی تھی تاکہ قتل کی اس وارادات میں اس کے کردار کا پتا نہ چل سکے۔تاہم وہ بعد میں اپنی اس دوست کے جنازے پر پکڑی گئی ہے اور پولیس اس سے تفتیش کررہی ہے۔

If You Like This Post. Please Take 5 Seconds To Share It.

comments please

Follow by Email

SEND FREE SMS IN PAKISTAN