Thursday, 19 February 2015

سعودی عرب کی شوریٰ کونسل نے ملک میں خواتین نیوز اینکروں کے لباس کے لئے ضابطہ اخلاق کا اعلان کرتے ہوئے انہیں اپنی خوبصورتی ظاہر نہ کرنے کی ہدایت کی ہے۔ عرب نیوز کے مطابق شوریٰ کونسل نے میڈیا میں کام کرنےوالی خواتین کے لباس سے متعلق ضابطے کا اعلان کردیا ہے جس کا اطلاق سعودی عرب میں کام کرنے والی تمام خواتین میڈیا ورکروں پر ہوگا جس کے تحت خواتین کو مناسب لباس پہننا ہوگا جب کہ شوریٰ نے اس بات کی بھی ہدایت کی ہے کہ وہ دوران ڈیوٹی ایسا لباس پہنیں جو شائستہ بھی ہو اور اس سے خوبصورتی کا اظہار نہ ہوتا ہو۔ شوریٰ کی ایک خاتون رکن لطیفہ الشعلان نے خواتین ٹی وی اینکروں کے لباس کے حوالے سے جاری ہونے والی ہدایات پر حیرت کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ ملک میں اس سے کہیں زیادہ اہمیت کے حامل ایشوز ہیں جنہیں حل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے میڈیا میں داعش کی سرگرمیوں اور ان سے لاحق خطرات سے نمٹنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ میڈیا کو سعودی عرب کا کردار ایک اعتدال پسند سیاسی قوت کے طور پر اجاگر کرنا ہوگا۔ واضح رہے کہ شوریٰ کے اعلان سے قبل ہی سعودی عرب کا سرکاری ٹیلی ویژن اپنی خواتین اینکروں کو روایتی سعودی عبایا پہننے کا حکم دے چکا ہے۔


If You Like This Post. Please Take 5 Seconds To Share It.

comments please

Follow by Email

SEND FREE SMS IN PAKISTAN